MAZAHIR JAFFRI

Mazahir Jaffri,  One of the most renowned shayar of the Mumbai poetry circuit. Started writing and performing when he was 12. He has a family of religious shayari background. His mom played a very supportive role. 

Tu hi bata ke kaise jiya jaye zindagi

Tu hi bata ke kaise jiya jaye zindagi
Charo taraf hai maut kaha paye zindagi

تو ہی بتا کہ کیسے جیا جائے زندگی
چاروں طرف ہے موت کہاں پائے زندگی


Bikhri hui hai tukdo me har simt har jagah
Kin kin jagah  se tujko utha laye zindagi


بکھری ہوئی ہے ٹکڑوں میں ہر سمت ہر جگہ
کن کن جگہ سے تجھ کو اٹھا لائے زندگی


Kabhi ranjish e dunia to kabhi tera satana 
Charo taraf se hum pe sitam dhaye zindagi


کبھی رنجشیں دنیا تو کبھی تیرا ستانا
چاروں طرف سے ہم پہ ستم ڈھائے زندگی


Baithi hai mu phulaye andhere me tu kahi
kya sar kata ke tujko ab manaye zindagi 


بیٹھی ہے منہ پھلائے اندھیرے میں تو کہیں
کیا سر کٹا کے تجھ کو اب منائے زندگی


Tera na hausla hai na tu  sath de rahi 
Hain kaunsa dar aur kidhar jaye zindagi


تیرانا حوصلہ ہے نہ تو ساتھ دے رہی
ہیں کون سا در اور کدھر جائے زندگی


Jaan bhi gayi  aur meri jaan bhi gayi 
Sab chhin kar mera mujhe tadpaye zindagi


جان میں بھی گئی اور میری جان بھی گئی
سب چھین کر میرا مجھے تڑپائے زندگی


Har shaks hai farebi karu kis pe mai yaki'n 
 Kis kis ko hum gale se ab  lagaye  zindagi 


ہر شخص ہے فریبی کرو قسط پر میں یقیں
کس کس کو ہم گلے سے اب لگائے زندگی

مظاہر جعفری

©2019 by Onenest. Proudly created with Wix.com

CONTACT US 

OneNest, Sector 12, Kharghar, Navi Mumbai, Maharashtra, India